فرمانِ مصطَفٰے صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم ہے

ایام میں بہترین وہ یومِ عرفہ ہے جوجمعہ کے موافق ہو جائے اور اس روز کا حج اُن ستر(۷۰) حجو ں سے افضل ہے جو جمعہ کے دن نہ ہوں۔

آپ کو عزمِ مدینہ مُبارَک ہو

فرمانِ مصطفٰی صلی اللہ تعالیٰ علیہ وآلہ وسلم ہے:’’ علم کا حاصل کرنا ہر مسلمان پر فرض ہے۔‘‘( اِبن ماجہ ج۱ ص۱۴۶ حدیث ۲۲۴)اِس کی شَرح میں یہ بھی ہے کہ حج ادا کرنے والے پر فرض ہے کہ حج کے ضَروری مسائل جانتا ہو۔عُمُوماً حُجّاجِ کرام طواف و سَعی وغیرہ میں پڑھی جانے والی عَرَبی دعاؤں میں زیادہ دلچسپی لیتے ہیں اگرچِہ یہ بھی بَہُت اچّھا ہے جب کہ دُرُست پڑھ سکتے ہوں، اگر کوئی یہ دعائیں نہ بھی پڑھے تو گنہگار نہیں مگر حج کے ضَروری مسائل نہ جاننا گناہ ہے ۔ رفیقُ الحرمین ان شآء اللہ عزوجل آپ کو بَہُت سارے گناہوں سے بچا لے گی۔ بعض مفت دی جانے والی حج کی اُردو کتابوں میں شَرعی مسائل میں سخت بے احتیاطی سے کام لیا گیا ہے


Madina

مدینے کی حاضری

مدینۂ منوَّرہ زادھا اللہ شرفا وتعظیما کا مقدّس سفرآپ کومبارَک ہو! راستے بھر دُرُود وسلام کی کثرت کیجئے اورنعتیہ اَشعار پڑھتے رہئے یا ہوسکے تو ٹیپ ریکارڈر پرخوش اِلحان نعت خوانوں کے کیسٹ سنتے رہئے کہ ان شآء اللہ عزوجل اس طرح ترقّیِ ذوق کے اسباب ہوں گے


Madina-tu-Manwara

بچوں کا حج

سُوال :کیا بچے بھی حج کر سکتے ہیں؟
جواب: جی ہاں۔چُنانچِہ حضرت سیِدُناعبد اللہ بن عبّاس رضی اللہ تعالٰی عنھما فرماتے ہیں کہ سرکار دوعالَم صلی اللہ تعالٰی علیہ وسلم مقامِ رَوْحامیں ایک قافلے سے ملے تو فرمایا …

Madina

عمرے کا طریقہ

طواف شُروع کرنے سے قَبْل مرد اِضْطِباع کرلیں یعنی چادر سیدھے ہاتھ کی بغل کے نیچے سے نکال کر اُس کے دونوں پَلّے اُلٹے کندھے پراِس طرح ڈال لیں کہ سیدھا کندھا کُھلا رہے۔ اب پروانہ وار شمعِ کَعبہ کے گرد طواف کے لئے تیّار ہوجائیے


Madina

نیّتیں

صِرْف رِضائے الٰہی عزوجل پانے کے لئے حج کروں گا۔

اِس آیتِ مبارکہ پرعمل کروں گا : وَ اَتِمُّوا الْحَجَّ وَ الْعُمْرَةَ لِلّٰهِ (پ ۲، البقرۃ:۱۹۶) ترجَمۂ کنزا لایمان : حج اورعمرہ اللہ کے لئے پورا کرو ۔۔




امام اہلسنت رحمۃ اللہ تعالی علیہ کی خاص نصیحت

بدنگاہی ہمیشہ حرام ہے نہ کہ اِحرام میں، نہ کہ مَوقِف یا مسجدُ الحرام میں ،نہ کہ کعبے کے سامنے، نہ کہ طَوافِ بیتُ اللہ میں۔ یہ تمہارے اِمتِحان کا موقع ہے، عورَتوں کو حُکم دیا گیا ہے کہ یہاں مُنہ نہ چھپاؤ اور تمہیں حُکم دیا گیا ہے کہ اُن کی طرف نگاہ نہ کرو، یقین جانو کہ یہ بڑے عزّت والے بادشاہ کی باندیاں ہیں اور اِس وَقت تم اوروہ سب خاص دربار میں حاضِر ہو، بِلا تَشبِیہ شیر کا بچّہ اُس کی بغل میں ہو اُس وَقت کون اُس کی طرف نگاہ اُٹھا سکتاہے تواللہ عزوجل واحدِ قہّار کی کنیزیں کہ اُس کے دربارِ خاص میں حاضِر ہیں، اُن پر بدنگاہی کس قَدَر سخت ہوگی


This is just a simple notice. Everything is in order and this is a simple link.

SIGN IN YOUR ACCOUNT TO HAVE ACCESS TO DIFFERENT FEATURES

CREATE ACCOUNT

FORGOT YOUR DETAILS?

TOP