تعارف

الحمدللہ رب العالمین والصلوۃ والسلام علی سید المرسلین اما بعد فاعوذ باللہ من الشیطن الرجیم بسم اللہ الرحمن الرحیم

درود پاک کی فضیلت

شیخ طریقت،امیر اہلسنت، با نی دعوت اسلامی، حضرت علامہ مولانا ابو بلال محمد الیاس عطارقادری رضوی ضیائی دامت برکاتہم العالیہ اپنے رسالے ضیائے درودوسلام کے صفحہ 6 پرنور کے پیکر، تمام نبیوں کے سرور، دو جہاں کے تاجور، سلطان بحرو بر صلی اللہ تعالی علیہ والہ وسلم کا فرمان مشکبار نقل فرماتے ہیں کہ "مجھ پر درودپاک کی کثرت کرو بے شک یہ تمہارے لیے طہارت ہے۔ (مسند ابی یعلی ،الحدیث ٦٣٨٣،ج٥، ص٤٥٨ )

صلو ا علی الحبیب! صلی اللہ تعالی علی محمد

مجلس خصوصی اسلامی بھائی کا قیام:

شیخ طریقت، امیر اہلسنت، بانی دعوت اسلامی حضرت علامہ مولانا ابوبلال محمد الیاس عطار قادری رضوی دامت برکاتہم العالیہ کی دینی خدمات کا ایک زمانہ معترف ہے۔ نیکی کی دعوت کو ساری دنیا میں عام کرنے کے لئے آپ کی کوششیں روز روشن کی طرح عیاں ہیں۔آپ دامت برکاتہم العالیہ نے عالم اسلام کے مسلمانوں کو ایک عظیم مدنی مقصد پیش کیا کہ "مجھے اپنی اور ساری دنیا کے لوگوں کی اصلاح کی کوشش کرنی ہے۔ان شاء اللہ عزوجل "اس مدنی مقصد کے تحت آپ دامت برکاتہم العالیہ نے ١٤٠١ھ،1981 ء میں تبلیغ قرآن و سنت کی غیر سیاسی عالمگیر تحریک دعوت اسلامی کے مدنی کام کا آغاز فرمایا۔آپ دامت برکاتہم العالیہ کی پر خلوص اورانتھک کوششوں کی برکت سے دیکھتے ہی دیکھتے اس تحریک کا پیغام تادم تحریر کم و بیش 200 سے زائدممالک میں جاپہنچااور 96 سے زائد شعبہ جات میں مجالس کا قیام عمل میں آیا۔ جس میں ایک مجلس بنام"مجلس خصوصی اسلامی بھائی" بھی ہے۔ اس مجلس کا قیام تنظیمی طور پرتو5نومبر 2003ء میں ہوا ۔ جس کے قیام کا بنیادی مقصد یہ تھا کہ عمومی اسلامی بھائیوں کے ساتھ ساتھ خصوصی یغی گونگے بہرے اور نابینا اسلامی بھائیوں میں بھی نیکی کی دعوت کی دھومیں مچائی جائیں، اسلامی معاشرے کا با کر دار فردبننے میں ان کی ہر ممکن مدد کی جائے اور گونگے بہرے ، نابینا اور دیگر معذور اسلامی بھائیوں میں تبلیغ قران وسنت کی عالمگیر غیرسیاسی تحریک دعوت اسلامی کا پیغام اس قدر عام ہوجائے کہ ان سب کا شیخ طریقت، امیر اہلسنت دامت برکاتہم العالیہ کے عطا کردہ اس مدنی مقصد " مجھے اپنی اور ساری دنیا کے لوگوں کی اصلاح کی کوشش کرنی ہے ۔ان شاء اللہ عزوجل کے مطابق زندگی گزارنے کا مدنی ذہن بن جائے۔قوتِ گویائی وسماعت سے محروم خصوصی اسلامی بھائیوں (گونگے ،بہرے اورنابینا) کا معاشرے میں کیا مقام ہے۔یہ کسی سےپوشیدہ نہیں ہے۔یہ وہ لوگ ہیں جن کوعموماً معاشرے میں کوئی اہمیت نہیں دیتا ہے۔علم ِ دین نہ ہونے اور نیک صحبت سے دور ہونے کی وجہ سے بعض توضروری معلومات سے بھی محروم ہوتے ہیں۔چنانچہ شیخ طریقت، امیر اہلسنت دامت برکاتہم العالیہ نے ان خصوصی اسلامی بھائیوں کی طرف اپنی خاص توجہ فرمائی اور ارشاد فرمایا:"خصوصی اسلامی بھائیوں کابھی ایک اچھاخاصہ طبقہ ہے، ہمیں انہیں بھی سنتیں سکھانی ہیں۔

Top