HOW TO SHOP

1 Login or create new account.
2 Review your order.
3 Payment & FREE shipment

If you still have problems, please let us know, by sending an email to support@website.com . Thank you!

SHOWROOM HOURS

Mon-Fri 9:00AM - 6:00AM
Sat - 9:00AM-5:00PM
Sundays by appointment only!


Maqam-u-Ibrahim


اب سیدھا کندھا ڈھانپ لیجئے اور‘‘مَقامِ اِبراہیم’’پر آکر پارہ 1سورۃ البقرۃ کی یہ آیتِ مقدَّسہ پڑھئے: وَ اتَّخِذُوۡا مِنۡ مَّقَامِ اِبْرٰہٖمَ مُصَلًّیؕ ترجَمۂ کنزالایمان: اور ابراہیم کے کھڑے ہونے کی جگہ کونَماز کامقام بناؤ۔

اِضْطِباعی حالت مںر کَعبہ شریف کی طر ف مُنہ کئے حجرِ اَسود کی بائںہ(left) طرف رُکنِ یَمانی کی جانب حجرِ اَسْود کے قریب اِس طرح کھڑے ہوجائےب کہ پورا‘‘حَجَرِ اَسوَد’’ آپ کے سدنھے ہاتھ کی طرف رہے۔ اب بِغیر ہاتھ اُٹھائے اِس طرح طواف کی نیَّت کجئے :

نمازِ طواف

نَمازِ طواف:اب مقامِ ابراہیم کے قریب جگہ ملے تو بہتر ورنہ مسجدِ حرام میں جہاں بھی جگہ ملے اگر وَقْتِ مکروہ نہ ہو تو دو رَکْعَت نمازِ طواف ادا کیجئے، پہلی رَکْعَت میں قُلْ یٰۤاَیُّہَا الْکٰفِرُوۡنَ اور دوسری میں قُل ھُوَ اللّٰہ شریف پڑھئے، یہ نَماز واجِب ہے اور کوئی مجبوری نہ ہو تو طواف کے بعد فورا ًپڑھنا سُنَّت ہے۔اکثر لوگ کندھا کھلارکھ کر نَماز پڑھتے ہے یہ مکروہ ہے ۔ اِضطِباع یعنی کندھا کُھلا رکھنا صِرف اُس طواف کے ساتوں پَھیروں مںھ ہے جس کے بعد سَعی ہوتی ہے۔ اگر وَقْتِ مکروہ داخِل ہوگا ہو تو بعد مںھ پڑھ لجئے اور یاد رکھےل اس نَماز کا پڑھنا لازِمی ہے۔

مَقامِ ابراہیم پر دو رَکْعَت ادا کرکے دعا مانگئے،حدیثِ پاک میں ہے: اللہ عَزَّ وَجَلَّ فرماتا ہے: ’’جو یہ دُعا کرے گا میں اس کی خطا بخش دوں گا، غم دور کروں گا، محتاجی اُس سے نکال لوں گا، ہر تاجرسے بڑھ کر اس کی تجارت رکھوں گا، دنیا ناچار و مجبور اُس کے پاس آئے گی اگرچِہ وہ اُسے نہ چاہے۔‘‘ (ابن عساکر ج۷ص۴۳۱)


مقامِ ابراہیم کی دُعا

ayat

مقامِ ابراھیم پر نماز کے چار مدنی پھول


1. فرمانِ مصطَفٰےصلی اللہ تعالٰی علیہ وسلم:‘‘جو مقامِ ابراہم، کے پچھے دو رَکْعَتیں پڑھے، اس کے اگلے پچھلے گناہ بخش دئے جائںا گے اور قِیامت کے دن اَمْن والوں مںے مَحشور ہوگا (یینے اٹھایا جائگام)۔ ’’ (الشفا ،الجزء الثانی ص۹۳ )

2. اکثر لوگ بھڑا بھاڑ مںل گرتے پڑتے بھی زبردستی ‘‘مقامِ ابراھمر’’کے پچھے ہی نَماز پڑھتے ہںر، بعض حضرات مستورات کونَماز پڑھانے کلئے ہاتھوں کا حلقہ بنا کر راستہ گھیر لتے ہں انہںی اِس طرح کرنے کے بجائے بھڑے کے موقع پر‘‘نمازِ طواف’’مقامِ ابراھمی سے دُور پڑھنی چاہئے کہ طواف کرنے والوں کو بھی تکلفی نہ ہو اورخود کو بھی دھکّے نہ لگںع۔

3. مقامِ ابراہمب کے بعد اِس نَمازکے لےب سب سے افضل کعبۂ معظمہ کے اند ر پڑھنا ہے پھرحَطیم مںب مزیابِ رحمت کے نچےت اس کے بعدحَطیم مںب کسی اور جگہ پھر کعبۂ معظمہ سے قریب تر جگہ مںر پھر مسجدُالحرام مںب کسی جگہ پھر حَرَمِ مکّہ کے اندرجہاں بھی ہو۔ ۔(لُبابُ الْمَناسِک ص ۱۵۶)

4. سنّت یہ ہے کہ وقتِ کراہت نہ ہو تو طواف کے بعد فوراً نَماز پڑھے، بچر مںل فاصلہ نہ ہو اور اگر نہ پڑھی تو عمر بھر مںل جب پڑھے گا ، ادا ہی ہے قضا نہںی مگر بُرا کاا کہ سنّت فوت ہوئی۔ ۔(اَلْمَسْلَکُ الْمُتَقَسِّط ص ۱۵۵ )

نوٹ: مزید معلومات کے لئے‘‘رفیق الحرمین’’ کا مطالعہ فرمائیں۔


This is just a simple notice. Everything is in order and this is a simple link.

SIGN IN YOUR ACCOUNT TO HAVE ACCESS TO DIFFERENT FEATURES

CREATE ACCOUNT

FORGOT YOUR DETAILS?

TOP