Dars-e-Faizan-e-Sunnat K Madani Phool

د رس فیضان سنت کے مد نی پھول

* فرمان مصطفٰے صلی اللہ تعالٰی علیہ وسلم : جو شخص میری امت تک کوئی اسلامی بات پہنچائے تا کہ اُس سے سنت قائم کی جائے یا اس سے بد مذہبی دُور کی جائے تو وہ جنتی ہے۔ (حِلْيَةُ الْاولياء ج۱۰ص۴۵رقم ۱۴۴۶۶)

* سرکارِ مدینہ صلی اللہ تعالٰی علیہ وسلم نے ارشاد فرمایا: “اللہ تعالٰی اسکو تروتازہ رکھے جو میری حدیث کو سنے ، یاد رکھے اور دوسروں تک پہنچائے ۔” (سُنَنِ تِرمِذي ج۴ ص۲۹۸حديث ۲۶۶۵ )

* حضرتِ سیدنا ادریس علی نبینا وعلیہ الصلٰوۃ والسلام کے نام مبارک کی ایک حکمت یہ بھی ہے کہ کُتُب الہٰیہ کی کثرت درس وتدریس کے باعث آپ علی نبینا وعلیہ الصلٰوۃ والسلام کا نام ادریس ہوا۔ (تفسيرکبير ج ۷ ص ۵۵۰، تفسير الحسنات ج۴ص۴۸)

* حضورغوث پاک رحمتہ اللہ تعالٰی علیہ فرماتے ہیں: ” دَرَسْتُ الْعِلْمَ حتّٰي صِرْتُ قُطْباً” (یعنی میں علم کادرس لیتا رہایہاں تک کے مقام قطبيت پر فائز ہوگیا) (قصيدۂ غوثيه)

* فیضان سنت سے درس دینا بھی دعوت اسلامی کا ایک مدنی کام ہے ۔ گھر، مسجد ، دکان، اسکول ،کالج، چوک وغیرہ میں وقت مقرر کر کے روزانہ درس کے ذریعے خوب خوب سنتوں کے مد نی پھول لٹائیے اور ڈھیروں ثواب کمائیے۔

* فیضان سنتسے روزانہ کم از کم دودرس دینے یا سننے کی سعادت حاصل کیجئے۔

پارہ 28 سورۃ التحریم کی چھٹی آیت میں ارشاد ہو تا ہے:

يٰۤاَيُّهَا الَّذِيۡنَ اٰمَنُوۡا قُوۡۤا اَنۡفُسَكُمْ وَ اَهۡلِيکُمْ نَارًا وَّ قُوۡدُهَا النَّاسُ وَ الْحِجَارَةُ (پ۲۸ التحریم:۶)

ترجمہ کنزالایمان: اے ایمان والو ! اپنی جانوں اور اپنے گھر والوں کو اس آگ سے بچاؤجس کے ایندھن آدمی اور پتھر ہیں۔

اپنے آپ کو اور اپنے گھر والوں کو دوزخ کی آگ سے بچانے کا ایک ذریعہ فیضان سنت کا در س بھی ہے۔( درس کے علاوہ سنتوں بھرے بیان یا مدنی مذاکرہ کا روزانہ ایک کیسٹ بھی گھر والوں کو سنایئے)